مشکے: پاکستانی فورسز ہاتھوں پروفائلنگ و تشدد سے لوگوں کا جینا حرام

, ,

بلوچستان کے ضلع آواران کی تحصیل مشکے کے مختلف علاقے میں پاکستانی فوج کے ہاتھوں علاقہ مکینوں کا پروفائلنگ اور تشدد سے جینا حرام ہوگیا ہے۔

علاقائی ذرائع کے مطابق پاکستانی فوج بلوچ آزادی پسند کارکنوں اور جہد کاروں کی عزیز و رشتہ داروں کی بار بار پروفائلنگ کے باوجود لوگوں کو فورسز روزانہ سینکڑوں کلو میٹر دور گجر چھاؤنی میں روزانہ جبری حاضر باشی کے لیے بلاتے ہیں جہاں فرد فرد کی حاضری لینے کے بعد ہر ایک کو کافی تشدد کا نشانہ بنانے کےبعد شام سات بجے چھوڑ دیتے ہیں اور اگلے دن صبح وقتی ہر ایک کو دوبارہ چھاؤنی میں موجودھونے پر زور دیتے ہیں۔

مشکے کے مختلف علاقے پروار بنڈکی اور جکی سے لوگ روزانہ سینکڑوں کلو میٹر پیدل سفر طے کرکے فورسز کے سامنے پیش ہوتے ہیں۔جہاں ایک جانب غربت اور دوسرے طرف فوجی جارحیت نے لوگوں کا جینا،حرام کردیا ہے۔

علاقائی ذرائع کے مطابق فورسز کی جانب سے لوگوں کوہراسانی کا سامناہے جہا ں فورسز انہیں بلا وجہ کیمپ بلاکر تشدد کا نشانہ بنا رہی ہے جس کی وجہ سے وہ اپنی زندگیوں سے بیزار ہوتے جارہے ہیں

Leave a Reply